About the author

14 Comments

  1. 1

    Syed Waqar Ali Shah

    سبوخ سید صاحب مجھے نہیں معلوم آئی بی سی میں یہ خبر کس نے بنائی لیکن کیا آپ نے یہ پوری ویڈیو خود سن لی ہے ؟

    Reply
    1. 1.1

      ABDUL RAZZAQ CHISHTI

      پوری وڈیو سماعت کرنے کے بعد یہ ثابت نہیں ہوتا کہ ممتاز قادری صاحب کا فعل کلی طور پر غلط تھا۔۔۔۔ تقی صاحب ممتاز قادری کی نیت پر شک نہیں کر رہے بلکہ اسکی تحسین کر رہے ہیں اور مانتے ہیں کہ قانون جمہور علما کے عقیدے پر استوار ہے نہ کہ حنفی علما کے ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

      Reply
    2. 1.2

      Fazal Hadi Hassan

      باکل اپ کی بات درست ہے
      بلکہ انہوں نے اگر ایک طرف قادری کے عمل درست نہیں کہا اور واقعی ریاست کی ذمہ داری کوئی فرد اپنے ہاتھ میں لے سکتا لیکن دوسری طرف انہوں نے قادری کے بارے اچھے الفاظ کیساتھ ان کے جذبے کو نیک قرار دیا ہے

      Reply
  2. 2

    حسیب احمد حسیب

    خود مفتی صاحب نے یہاں فرمایا کہ جمہور کا مسلک یہی ہے کہ گستاخ کی سزا قتل ہے دوسری جانب احناف میں بھی متاخرین کا مسلک یہی ہے کہ گستاخ کی سزا قتل ہی ہوگی یعنی اس امر پر علماء امت کا اجماع منعقد ہو چکا ہے …

    دوسری جانب یہ بھی فرما دیا کہ پاکستان کا قانون جمہور کے مسلک پر ہے ناکہ احناف کے .

    دوسری جانب مفتی صاحب یہ بھی فرما رہے ہیں کہ اگر یہ ثابت ہو جاۓ کہ اگلا گستاخ ہے تو اسکے قتل کر دینے پر قصاص واجب نہیں ہوتا …

    پھر مفتی صاحب ممتاز قادری کی تحسین فرما رہے ہیں کہ اسکا جزبہ بہت نیک تھا اور الله کے ہاں اسکے اس عمل پر کوئی پکڑ نہ ہوگی .

    Reply
  3. 3

    ABDUL RAZZAQ CHISHTI

    جب ریاست اپنی زمہ داری ادا کرنے سے قاصر ہو جائے یا اس سے نہ صرف کلی طور پر صرف نظر کرے بلکہ عوام کی واجح اکثریت کی رائے کیخلاف فیصلے صادر کرے تو ایسے حالات مین لوگوں کو قانون ہاتھ میں لینے کی حاجت پیش آتی ہے ۔ سلمان تاثیر جو کہ خود وقت کے ھاکموں میں سے ایک تھے کہ حوالے سے ریاست نے غیر ذمہ داری کا مظاہرہ کیا اور نتیجے کے طور پر قتل کا یہ وقوعہ پیش اآیا ۔۔۔۔۔۔

    Reply
  4. 4

    Shahid Rababni

    Regret that Mulana Usmani has not enough information about the issue , he start every opinion with a lot of doubt and hesitation of his knowledge about the facts of the issue .keeping his position as a very respectable Alam e Deen and his follower ship it was better to avoid till he must know the facts. On this issue Salman Taseer also insult the Ullama , and his Videos are there he told Ullama as Illiterates and that he put them (Ullama) on the toe of his shoes.

    Reply
    1. 4.1

      Prince Riffat

      کسی الو کے پٹهے حرامزادے کو قانون ہاته میں لینے کا اختیار نہیں ہے اگر ریاست قانون پر عمل نہیں کر رہی تو ریاست کے خلاف عوامی مذاحمت کرنا ایک درست عمل یے کسی انسان کی جان لینا نہیں . پہلے خود علم و شعور حاصل کرو پهر کسی عالم پر تنقید کرنا جاہل انسان . فک قادری قاتل دہشت گرد

      Reply
      1. 4.1.1

        Muhammad UmarHayat

        ممتاز قادری کے پاس کوئی دلیل ہی نہیں تھی کہ اس نے ایک بیگناہ کو کیوں قتل کیا ، نہ ہی اس نے اس مسلے کو عدالت میں پیش کر کے سلمان تاثیر کواس سلسلے میں کچھ بولنے کا موقع دیا گیا ، سلمان تاثیر دنیا کی ہر عدالت میں بیگناہ اور معصوم ہی جانا جاۓ گا ، یہ قصور کس کا ہے ؟ مولوی حنیف قریشی اور مسٹر عاشق رسول صاحب کا ، نہ جانے کیوں لوگ ممتاز قادری کو ہیرو ، شہید اور غازی کے القاب سے نواز رہے ہیں ، حالانکہ وہ اسلامی قانون کے مطابق تاثیر کے خلاف کچھ بھی ثابت نہیں کر سکا ، ممتاز قادری نے بیوقوفی کر کے مولوی حنیف قریشی کی سازش کا شکار ہو کر خود اپنی جان سے ہاتھ دھو بیٹھا

        ہماری عوام سیدھی سادی ان پڑھ ہے ، قادری نے ایک نہتے بیگناہ کو چھپ کر پیچھے سے اٹھائیس گولیاں ماری اور پھر صدر مملکت سے اپنی جان بخشی کی اپیلیں بھی کی ، صدر مملکت نے قادری کی ساری رحم کی اپیلیں مسترد کر دی اور قادری اپنے جرم کی پاداش میں پھانسی پر لٹک گیا ، عوام سوچتی نہیں کہ شہید نہ تو پیچھے سے چھپ کہ وار کرتا ہے اور نہ ہی کبھی اپنی زندگی کی بھیگ مانگتا ہے ، قادری جیسے ایک سفاک قاتل کو ہیرو بنا دیا

        اگر ہر ٹام اینڈ جیری اسی قادری کی طرح خود ہی گلی کا دادا بن کر قانون ہاتھ میں لے لے اور قتل و غارت کا بازار گرم کرتے ہوۓ ہر چوک چوراہے پر اپنا من پسند انصاف بانٹتا پھرے تو پھر عدالت ، فوج ، پولیس اور قانون کی تو کوئی ضرورت ہی باقی نہیں رہتی ، پھر تو پاکستان کو قتلستان بننے سے کوئی نہیں روک سکے گا

        Reply
    2. 4.2

      Abdur Rahman

      So you are knowledgeable than him? Yes Salman Taseer said he keeps the “Molvees” under his foot, and that is.why they got him killed. He never for once insulted the Prophet saws.

      Reply
      1. 4.2.1

        Muhammad UmarHayat

        اور سپریم کورٹ کے آرڈر کے مطابق سلمان تاثیر بے گناہ تھااور توہین رسالت کے قانون کا غلط استعمال کر کے ان کو بے گناہ قتل کیا گیا۔ اس کے مطابق ممتاز قادری خود اور فتوٰی دینے والے توہین رسالت کے گستاخ بن بیٹھے ہیں۔

        ہمارے مولویوں کا اور ان کے ساتھ چلنے والوں کا یہ بہت بڑا مسئلہ ہے کہ وہ یہ تو بڑے زوروشور سے بتا دیتے ہے کہ گستاخ رسول ﷺ واجب لقتل ہے مگر یہ نہیں بتاتے کہ اس قانون کا غلط استعمال کرنے والا ، فتوی دینے والا بھی واجب قتل ہے۔ جبکہ نہ کوئی تحقیق نہ کوئی ریسرچ بس مولوی نے فتوی دیے دیا ہے اب وہ صرف اور صرف واجب القتل ہے اور جب بندہ قتل ہو جاتا ہے بعد میں پتہ چلتا ہے کہ وہ تو الزام لگانے والے کا قتل ہو جانے والے کا لین دین کا معاملہ ہے۔ بجائے پھر الزام لگانے والے اور فتوی دینے والے کو بھی پھانسی ہو ہم اس کو سچ عاشق رسولﷺ ثابت کرنے میں لگے رہتے ہیں۔

        Reply
  5. 5

    Hassan Bin Waheed

    مفتی تقی عثمانی صاحب کے اس بیان میں خاص کر فقہ حنفی کے نقطہ نظر سے دو باتیں دو ٹوک انداز میں واضح کر دی گئی ہیں:

    1) جو شخص مسلمان ہو اور نبی کریم ﷺ کی شان میں گستاخی کرے تو احناف کے نزدیک بھی اس کی سزا قتل ہے جیسا کہ جمہور اھل علم کا مسلک بھی یہی ہے۔ دیگر ائمہ صرف واجب القتل قرار دیتے ہیں احناف کے ہاں وہ مرتد اور اسلام سے خارج بھی ہے۔

    2) جو شخص کسی گستاخ رسول کو از خود قتل کردے تو اس پر قصاص نہیں ہوگا۔ اگر حکومت اسے سزا دے بھی تو قصاص نہیں لے سکتی۔

    سمجھ نہیں آرہا کہ اس سے جدیدیت اور دیسی لبرلز کا کون سا مقدمہ ثابت ہوگیا ہے جس پر اتنا شور ہے اور اس کو اس انداز میں پیش کیا جا رہا ہے۔

    Reply
    1. 5.1

      Muhammad UmarHayat

      مفتی تقی عثمانی صاحب اسلام کے دیوبندی سیکشن کے متفقہ شیخ الاسلام ہیں.

      آپ شریعت کورٹ کے جج اور اسلامی نظریاتی کونسل کے رکن رہ چکے ہیں.

      آپ اسلامی بینکاری کے حوالے سے دنیا کے پانچ بڑے ناموں میں سے ایک ہیں

      آپ “پدرم سلطان بود” کے بنیادی تقاضے پہ پورے اترتے ہیں.

      آپ کے برادربزرگ اسلام کے دیوبندی سیکشن ہی کے متفقہ مفتی اعظم ہیں.

      آپ کا ایمان مکمل اور معفرت تمام ہے.

      آپ یہود ونصاری کے ایجنٹ بالکل نہیں ہیں.

      آپ ڈالرز اور پونڈز لیکر کچھ لکھنے اور کہنے پہ یقین نہیں رکھتے.

      آپ احساس کمتری کا شکار ہوکر کوئی نقطہ نظر نہیں اپناتے.

      آپ کسی مخصوص طبقے کی داد سمیٹنے کیلئے کوئی موقف اختیار نہیں کرتے.

      آپ چونکہ فیس بک پہ موجود نہیں ہیں تو ظاہر ہے آپ لائکس اور کمنٹس حاصل کرنے کیلئے صفحے بھی سیاہ نہیں کرتے.

      آپ کا عشق رسول کسی بھی شک شبہے سے بالاتر ہے.

      آپ لبرل نہیں ہیں.

      آپ غامدی بھی نہیں ہیں.

      مگر.!!

      آپ کہتے ہیں

      “سلمان تاثیر نے اگر توہین رسالت کے قانون کو کالا بھی کہا، تب بھی دیکھا جائے گا کہ سلمان تاثیر کی مراد کیا تھی. اگر ان کی مراد قانون میں موجود کوئی سقم تھی یا پھر وہ یہ سمجھتے تھے کہ گستاخ کی سزا قتل نہیں ہونی چاہیئے تو اس صورت میں وہ توہین رسالت کے مرتکب نہیں ہیں”

      لیجیئے صاحب.!!

      سلمان تاثیر کی مراد سن لیجیئے. سلمان تاثیر نے کہا تھا کہ

      “میں اس قانون کو اس لیئے کالا کہتا ہوں کہ اس کا ننانوے فیصد استعمال غلط ہورہا ہے، یہ قانون ہم انسانوں نے بنایا تھا اور ہم انسانوں کو چاہیئے کہ اس پہ نظر ثانی کریں.

      باقی جب مجھ جیسا گنہگار توہین رسالت کا نہیں سوچ سکتا تو کوئی بھی مسلمان کیوں سوچے گا. اگر کوئی مسلمان توہین کا سوچ بھی لے تو یہ سراسر کوئی دماغی خلل ہوسکتا ہے”

      اب..!!

      دیوبندی حضرات ہی مفتی تقی صاحب کے اس کلپ سے ایسے دور بھاگ رہے ہیں، جیسے کوہ قاف کی کوئی پچھل پیری منہ میں آگ لیئے پیچھے پڑگئی ہو.

      نوٹ: مفتی تقی عثمانی صاحب کیلئے کوئی نازیبا جملہ خدا نخواستہ زبان کی نوک پہ آگیا ہو، تو وہ مجھ پر نکال کر ثواب دارین حاصل کرسکتے ہیں.

      (میں دیوبندی نہیں ہوں)

      Reply
  6. 6

    مجیب الحق

    مضمون کا عنوان گمراہ کن ہے۔ اور غلط تائثر دیتا۔ ادارے کو احتیاط کرنی چاہیئے۔

    Reply
  7. 7

    Muhammad UmarHayat

    جناب لگتا ہے کہ آپ جناب نے سپریم کورٹ کا آرڈر نہیں پڑھ۔ جناب یہ لنک ہے سپریم کورٹ کے آرڈر کا

    http://www.supremecourt.gov.pk/web/user_files/File/Crl.A._210_2015.pdf

    اس میں آپ جناب کی تمام باتوں اور جو باتیں میڈیا پر آرہی ہیں۔ اس کا جواب اگر آپ کو ٹھوری سی بھی انگلش آتی ہے تو اس Judgment میں مل جائے گا۔ اور پھر آپ خود کہے گے انشاءاللہ کہ ممتاز قادری اور فتوی دینے والے توہین رسالت کے مرتکب ہوئے ہیں۔ یہ میری اور آپ کی رائے سے فیصلہ نہیں ہوا نہ کسی مولوی کے کہنے یا نہ کہنے سے ہوا ہے۔ خدا کے واسطے یہ سنی سنائی باتوں پر نہ جائے۔ Judgment آنے سے پہلے میں بھی سلمان تاثیر کو گستاخ رسول ﷺ سمجھتا تھا۔ لیکن جب Judgment میں سارے سوالوں کے جواب ملنے پر یہ سپریم کورٹ میں ثابت ہو گیا کہ سلمان تاثیر ناحق قتل کیا گیا تو اب میں ممتاز قادری اور فتوی دینے والوں گستاخ رسول ﷺ سمجھتا ہوں۔

    ہمارے مولویوں کا اور ان کے ساتھ چلنے والوں کا یہ بہت بڑا مسئلہ ہے کہ وہ یہ تو بڑے زوروشور سے بتا دیتے ہے کہ گستاخ رسول ﷺ واجب لقتل ہے مگر یہ نہیں بتاتے کہ اس قانون کا غلط استعمال کرنے والا ، فتوی دینے والا بھی واجب قتل ہے۔ جبکہ نہ کوئی تحقیق نہ کوئی ریسرچ بس مولوی نے فتوی دیے دیا ہے اب وہ صرف اور صرف واجب القتل ہے اور جب بندہ قتل ہو جاتا ہے بعد میں پتہ چلتا ہے کہ وہ تو الزام لگانے والے کا قتل ہو جانے والے کا لین دین کا معاملہ ہے۔ بجائے پھر الزام لگانے والے اور فتوی دینے والے کو بھی پھانسی ہو ہم اس کو سچ عاشق رسولﷺ ثابت کرنے میں لگے رہتے ہیں۔

    The court further noted that apparently the governor had not uttered any word which depicts that the governor had defiled the sacred name of Holy Prophet (PBUH).

    Hearing former elite force guard Mumtaz Qadri’s plea, a three-judge bench headed by Justice Asif Saeed Khosa said the main issue in the case is whether individuals can presume the authority to punish a blasphemer.

    Reply

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

error: برائے مہربانی اسے شیئر کیجئے۔۔۔!! شکریہ