حیدرآباد میں ایم کیو ایم نے میدان مارلیا

mqm سندھ میں بلدیاتی انتخابات کے دوسرے مرحلے میں حیدرآباد سے متحدہ قومی موومنٹ نے سادہ اکثریت حاصل کرتے ہوئے 78 نشستیں حاصل کرلی ہیں۔

بلدیاتی انتخابات کا دوسرے مرحلے میں ووٹنگ کا عمل مکمل ہونے کے بعد ووٹوں کی گنتی اور غیر سرکاری اور غیرحتمی نتائج کی آمد کا سلسلہ جاری ہے، سندھ میں مجموعی طور پر پاکستان پیپلز پارٹی پہلے اور متحدہ قومی موومنٹ دوسرے نمبر پر ہے جب کہ حیدرآباد میں ایم کیو ایم نے سادہ اکثریت حاصل کرلی ہے، غیر حتمی غیر سرکاری نتائج کے مطابق حیدرآباد میونسپل کارپوریشن کی 94 نشستوں میں ایم کیو ایم نے 77 نشستیں اپنے نام کرلی ہیں جس کے بعد وہ اکیلے ہی اپنا میئر بنانے کی پوزیشن میں آگئی ہے جب کہ پیپلزپارٹی کے حصے میں 16 نشستیں آئیں، 2 نشستوں پر بعد میں پولنگ ہوگی اور ایک نشست ک نتائج روک لیے گئے ہیں۔

دوسری جانب ایم کیو ایم کے امیدواروں کی کامیابی پر کارکنوں کا جوش آسمان کو چھونے لگا، کارکنوں نے خوب جشن منایا اور مٹھایاں تقسیم کیں جب کہ ایم کیو ایم کی کامیابی کے بعد کراچی میں بھی بڑی تعداد میں کارکنان سڑکوں پر نکل آئے اور جشن منایا۔ متحدہ قومی موومنٹ کے امیدواران کی اکثریت سے کامیابی پرایم کیو ایم کے مرکز نائن زیروعزیز آباد میں جشن منایا گیا جب کہ حیدرآباد اور میرپورخاص میں بھی جشن فتح منایا گیا۔

واضح رہے الیکشن کمیشن نے سپریم کورٹ کے حکم نامے کے بعد حیدرآباد کے 24یونین کونسلز میں انتخابات ملتوی کردیے تھے

Facebook
Twitter
LinkedIn
Print
Email
WhatsApp

Never miss any important news. Subscribe to our newsletter.

آئی بی سی فیس بک پرفالو کریں

تجزیے و تبصرے