کراچی : سیلاب متاثرہ بچی کا اغوا و اجتماعی زیادتی

کراچی: کلفٹن میں سیلاب متاثرہ بچی کواغوا کرکےاجتماعی زیادتی کا نشانہ بنانے کا واقعہ پیش آیا ہے، متاثرہ بچی کے اغوا اور زیادتی میں کارسوار2 نامعلوم ملزمان ملوث ہیں۔

پولیس نے واقعے کامقدمہ بوٹ بیسن تھانے میں درج کرکے ملوث ملزمان کی تلاش شروع کردی۔

اتوارکی صبح تقریبا11 بجے کے قریب بوٹ بیسن تھانے کے علاقے کلفٹن بلاک 4 میں واقع مقامی شاپنگ مال کے باہر سے سیلاب متاثرہ 10 سالہ بچی کو زبردستی اغوا کیا گیا اورتقریباً 2 بجے بچی کو زیادتی کا نشانہ بنا کراسی مقام پرچھوڑ دیا گیا شام میں بچی کی حالت غیرہوئی تواسے جناح اسپتال منتقل کیا گیا جہاں بچی کے ساتھ اجتماعی زیادتی کی تصدیق ہوگئی۔

پولیس سرجن کی جانب سے ضلع ساؤتھ پولیس کو آگاہ کیا گیا پولیس سرجن ڈاکٹر سمعیہ کے مطابق بچی کی حالت اس قدر بری تھی کہ آپریشن تھیٹرمیں ہی ایگزامن کرنا پڑاابتدائی معائنے سے لگ رہا تھا کہ بچی کےساتھ گینگ ریپ ہوابچی کےجسم پرخروش اورتشدد کے نشانات ہیں ڈی این اے اور دیگر ٹیسٹ کےلیے نمونے حاصل کرلیے گئے ہیں۔

پولیس حکام کے مطابق متاثرہ بچی نے اپنے ابتدائی بیان میں پولیس کو بتایا کہ 2 نامعلوم افرادنےاسے زیادتی کا نشانہ بنایا ہے۔ واقعے کا مقدمہ الزام نمبر2022/672 بجرم دفعہ 34/376،364 اے کے تحت بوٹ بیسن تھانے میں درج کر لیا گیا مقدمہ کارسوار2 نامعلوم ملزمان کے خلاف درج کیا گیا۔

پولیس حکام کے مطابق متاثرہ بچی کا تعلق شکارپور سے ہے ۔ سیلاب کے باعث متاثرہ بچی اپنی والدہ اور دیگر بہن بھائیوں کے ہمراہ کراچی منتقل ہوئی تھی اورکلفٹن شاہ رسول کالونی میں فٹ پاتھ پر رہ رہی تھی ، پولیس نے شواہد کی روشنی میں تحقیقات کا آغاز کردیا ہے۔

Facebook
Twitter
LinkedIn
Print
Email
WhatsApp

Never miss any important news. Subscribe to our newsletter.

آئی بی سی فیس بک پرفالو کریں

تجزیے و تبصرے