عمران خان نے مشترکہ طور پر آرمی چیف لانے کی پیش کش کی : وزیراعظم

اسلام آباد: وزیراعظم شہباز شریف نے دعویٰ کیا ہے کہ پی ٹی آئی کے چیئرمین عمران خان نے مشترکہ طور پر آرمی چیف لانے کی پیش کش کی تھی جسے میں نے مسترد کردیا۔

وی لاگرز سے گفتگو کرتے ہوئے وزیراعظم نے دعویٰ کیا کہ عمران خان نے ایک شخص کے ذریعے متفقہ شخص کو آرمی چیف تعینات کرنے کی آفر بھیجی اور کہا کہ آرمی چیف کیلیے تین نام میں اور تین نام آپ دیں۔

شہباز شریف کے مطابق عمران خان نے کہا کہ ہم ان چھ ناموں کو سامنے رکھتے ہوئے نئے آرمی چیف کی تعیناتی کا فیصلہ کرلیں گے اور اگر اس میں کسی ایک کا نام مشترک ہوا تو اتفاق کرلیں گے۔

وزیراعظم نے کہا کہ عمران خان کی پیش کش پر میں نے شکریہ کہہ کر صاف انکار کردیا اور پیغام بھیجا کہ یہ آئینی فریضہ ہے جو وزیراعظم کو ہی ادا کرنا ہوتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اس کے ساتھ ہی میں نے عمران خان کو میثاق جمہوریت اور میثاق معیشت پر بات چیت کرنے کی پیش کش کی ہے۔

شہباز شریف نے یہ بھی دعویٰ کیا کہ ڈی جی آئی ایس آئی ندیم انجم نے مجھ سے اجازت لے کر پریس کانفرنس کی۔ وزیراعظم نے مزید کہا کہ عمران خان دو باتیں مذاکرات کے ذریعے حل کرنے کے خواہش مند ہیں، جس میں ایک مسئلہ آرمی چیف کی تعیناتی کا ہے۔

Facebook
Twitter
LinkedIn
Print
Email
WhatsApp

Never miss any important news. Subscribe to our newsletter.

آئی بی سی فیس بک پرفالو کریں

تجزیے و تبصرے