چین کا ملکی کرنسی RMB کے بین الاقوامی سطح پر فروغ کیلئے مسلسل کوششوں کا اعادہ

چین کی ملکی کرنسی رینمنبی کے بین الاقوامی سطح پر فروغ میں چین کے دوست ممالک اور چین کی بہتر اقتصادی ترقی اور اوپن آپ پالیسیز کے سبب مسلسل اضافہ ہو رہا ہے، اس کیساتھ ساتھ چین کو ملکی کرنسی رینمنبی کی اہمیت میں غیر ملکی ادائیگیوں، سرمایہ کاری، فنانسنگ، زر مبادلہ کے ذخائر اور انوائسنگ کے اہم عوامل کے سبب بھی اسکی اہمیت میں نمایاں اضافہ ریکارڈ کیا گیا ہے۔

ایک چینی عہدیدار نے واضح کیا کہ چین غیر ملکی سرمایہ کاری اور مالیاتی لین دین میں آر ایم بی کی تصفیوں کے بنیادی نظام کو مزید بہتر بنانے کا خواہاں ہے، چین زرمبادلہ اور مالیاتی مارکیٹ کو مزید وسعت دینے کا بھی اعادہ کیے ہوئے ہے اور چینی کرنسی رینمنبی کی بین الاقوامی سطح پر بہتر رسائی کو یقینی بنائے، اور اسکی بین الاقوامی استطاعت کو ایک منظم انداز میں فروغ دیتا رہے گا۔

.
رواں سال اپریل میں، ارجنٹائن کی حکومت نے اعلان کیا کہ وہ چین سے درآمدات کے لیے RMB کے ساتھ ادائیگی کرے گی۔ ارجنٹائن کے وزیر اقتصادیات سرجیو ماسا نے کہا کہ اس سے چین اور ارجنٹائن کے درمیان کرنسی کے تبادلے کے معاہدے کو مزید فعال کرنے کا محرک ثابت ہو گا، جس سے ارجنٹائن کو اپنے زرمبادلہ کے ذخائر کو مضبوط بنانے میں مدد حاصل ہوگی اور یہ ملک کے لیے اپنی اقتصادی صورتحال کو بہتر بنانے کے لیے اہم محرک بھی ثابت ہوگا۔

اس سے قبل 7 فروری کو، چین کے مرکزی بینک، پیپلز بینک آف چائنا (PBOC) نے اعلان کیا تھا کہ اس نے اپنے برازیلی ہم منصب کے ساتھ برازیل میں RMB کےباہمی انتظامات کے حوالے سے ایک یادداشتی معاہدے پر دستخط کیے ہیں۔

دو ماہ بعد، انڈسٹریل اینڈ کمرشل بینک آف چائنا (ICBC)، جسے PBOC نے برازیل میں RMB کلیئرنگ بینک کے طور پر اختیار دیا، اس طرح سے جنوبی امریکی ملک میں پہلی سرحد پار RMB سیٹلمنٹ ٹرانزیکشن کو وہاں کی مقامی برانچ کی حیثیت میں پروسیس کیا گیا، جس سے برازیل میں ICBC کے سرحد پار RMB بزنس میں خاطر خواہ پیش رفت ریکارڈ کی گئی۔

رواں سال مارچ کے آخر میں، پہلی یوآن کرنسی میں طے شدہ مائع قدرتی گیس (ایل این جی) کی تجارتی ڈیل مکمل ہوئی، جو کہ پیٹرول اور گیس کی تجارت میں سرحد پار یوآن کی ادائیگی میں چین کی جانب سے ایک بڑی پیش رفت ہے۔

بتایا جاتا ہے کہ چینی کرنسی میں طے پانے والا پہلا بین الاقوامی ایل این جی لین دین معاہدہ چائنا نیشنل آف شور آئل کارپوریشن اور فرانس کی ٹوٹل انرجی کے درمیان ہوا تھا۔ متحدہ عرب امارات سے تقریباً 65,000 ٹن ایل این جی کی درآمد کی گئی۔

حالیہ جاری اعداد و شمار کے مطابق، 2022 میں چین کی سرحد پار سے موصول ہونے والی وصولیوں اور ادائیگیوں کا مجموعی حجم 42 ٹریلین یوآن ($ 5.91 ٹریلین) ریکارڈ کیا گیا ہے، جو کہ 2017 کے مقابلے میں 3.4 گنا زیادہ ہے، اور یہ ملک کی کل سرحد پار وصولیوں اور ادائیگیوں کا تقریباً نصف ہے۔ اس سال کی پہلی سہ ماہی میں بھی غیر ملکی آر ایم بی کی سیٹلمنٹ میں واضح اضافہ رپورٹ کیا گیا ہے۔

اس کے علاوہ، PBOC نے 29 ممالک اور خطوں میں اکتیس ار ایم بی کلیئرنگ بینکوں کو اختیار دیا ہے، اور 40 ممالک اور خطوں میں مرکزی بینکوں یا مالیاتی حکام کے ساتھ دو طرفہ کرنسی کے تبادلے کے معاہدوں پر دستخط کیے ہیں، جن کی کل مالیت 4 ٹریلین یوآن سے زیادہ ہے۔

"غیر ملکی سطح پر چینی کرنسی آر ایم بی کی سیٹلمنٹ اسکے بین الاقوامی بڑھتے تشخص کو ظاہر کرنے والے اہم عوامل میں سے ایک ہے۔ چینی کرنسی کو زیادہ سے زیادہ ممالک اور خطوں میں سیٹلمنٹ اور ادائیگی کے لیے استعمال کیا جا رہا ہے، جو اس بات کا آئینہ دار ہے کہ اسے مزید بین الاقوامی اہمیتِ حاصل ہو رہی ہے،”

اس حوالے سے بینک آف چائنا ریسرچ انسٹی ٹیوٹ کے سینئر محقق وانگ جیا کیانگ نے کہا ہے کہ عالمی سطح آر ایم بی ریزرو کرنسی کے طور پر بھی مقبول ہو رہا ہے۔
برازیل کے مرکزی بینک کی طرف سے جاری کردہ ایک حالیہ رپورٹ کے مطابق، RMB 2019 میں برازیل کی ایک بین الاقوامی ریزرو کرنسی بن گئی۔ 2022 کے آخر تک، برازیل کے بین الاقوامی زر مبادلہ کے ذخائر میں RMB کا تناسب یورو کے تناسب سے بڑھ کر 5.37 فیصد تک پہنچ گیا، جس سے واضح ہوتا ہے کہ RMB برازیل کی دوسری سب سے بڑی بین الاقوامی ریزرو کرنسی بن گئی ہے ۔

80 سے زیادہ مرکزی بینکوں یا مالیاتی حکام نے RMB کو بین الاقوامی ریزرو کرنسی کے طور پر درج کیا ہے، بشمول برازیل کا مرکزی بینک۔ RMB نے پانچویں سب سے بڑی ریزرو کرنسی کے طور پر اپنی پوزیشن برقرار رکھی ہے، اور کرنسیوں کی ٹوکری میں اس کا وزن جو بین الاقوامی مالیاتی فنڈ کے خصوصی ڈرائنگ رائٹس – ایک بین الاقوامی ریزرو اثاثہ ہے جسے SDRs کے نام سے جانا جاتا ہے اس میں بھی تیسرے نمبر پر ہے۔

"زیادہ سے زیادہ مرکزی بینک یا مانیٹری اتھارٹیز اپنے زرمبادلہ کے ذخائر میں RMB کو شامل کر رہے ہیں، جو پوری طرح سے مارکیٹ کی طلب کی عکاسی کرتا ہے۔ گزشتہ برسوں میں، دنیا بھر کے مرکزی بینکوں کے پاس موجود زرمبادلہ کے ذخائر زیادہ تر امریکی ڈالر میں تھے۔ تاہم، ‘تمام انڈوں کو ایک ٹوکری میں ڈالنا’ واضح طور پر بین الاقوامی منڈی کے استحکام کو نقصان پہنچاتا ہے کیونکہ ان سالوں میں امریکی کرنسی کو زیادہ سے زیادہ غیر یقینی صورتحال کا سامنا ہے۔

” چائنا سینٹر فار انٹرنیشنل اکنامک ایکسچینجز کے محقق ژانگ ہوانبو نے کہا ہے کہ اندرونی ذرائع کا خیال ہے کہ RMB نے اس سال اپنے بین الاقوامی تشخص میں نئی ​​کامیابیاں اور پیشرفت حاصل کی ہے
RMB کلیئرنگ بینکوں اور مقامی کرنسی سویپ نیٹ ورکس کے قیام، آف شور RMB مارکیٹ کی ترقی، ملکی مالیاتی منڈی کے کھلنے اور چینی مالیاتی اداروں کی بیرون ملک ترتیب میں بہتری کے ساتھ، RMB نے ابتدائی طور پر اپنے بین الاقوامی استعمال کے نیٹ ورک کا اثر کو مزید بہتر بنایا ہے۔ .
اس کے علاوہ، آر ایم۔بی اثاثوں کی سرمایہ کاری اور رسک ہیجنگ کے افعال کو بتدریج بڑھایا گیا ہے، اور انٹرپرائزز سرحد پار تجارت، سرمایہ کاری اور فنانسنگ میں RMB کو استعمال کرنے کے لیے زیادہ تیار ہیں تاکہ کرنسی کی مماثلت کے خطرے سے بچا جا سکے

Facebook
Twitter
LinkedIn
Print
Email
WhatsApp

Never miss any important news. Subscribe to our newsletter.

آئی بی سی فیس بک پرفالو کریں

تجزیے و تبصرے