ن لیگ دوسال کےبعدمڈٹرم انتخابات کی طرف جاسکتی ہے. ن لیگ کے سینئر وفاقی وزیر کا انکشاف

ن لیگ کے سنیئر وفاقی وزیر نے انکشاف کیا کہ ن لیگ دو سال کے بعد انتخابات میں جانے کا سوچ رہی ہے۔لیڈرشپ نےدوسال کام کرنے کا کہا ہے،دو سال کے بعدالیکشن کے لئے تیار ہونگے اور مڈ ٹرم الیکشن میں جاسکتے ہیں۔انھوں نے کہا باقاعدہ مشاورت میں یہ بات زیربحث آئی ہےاور اس سوچ نے تقویت پکڑی ہے۔

وفاقی حکومت لینے کے حوالے سے پوچھے گئے سوال کے جواب میں وفاقی وزیر کا کہنا تھا کہ رائے ونڈ میں ہوئی میٹنگز میں شہباز شریف نے بھی حکومت لینے کی مخالفت کی تھی لیکن میاں نوازشریف نے حکومت لینے کا فیصلہ کیا اور کہا کہ وفاقی حکومت لینی ہے، جس پر سب نے سرتسلیم خم کیا۔

وفاقی وزیر نےایک اور حیران کن بات کی کہ شہباز شریف،محسن نقوی سے بالکل خوش نہیں ہیں اور نہ ہی ان کی کابینہ میں موجودگی سے کمفرٹیبل ہیں۔

انھوں نے کہا اسی لئے محسن نقوی کو سیکرٹری داخلہ ان کی مرضی کا دیا گیا ہے اور نہ ہی آئی جی اسلام آباد اور مستقبل میں بھی ان کے ساتھ ایسا ہی کیا جائیگا۔وہ اپنی مرضی سے فیصلے نہیں کرسکیں گے۔

وفاقی وزیر نے کہا کہ محسن نقوی کو ای سی ایل کمیٹی میں شامل نہیں کیا گیا۔ اعلان کے باجود مستقبل میں بھی وہ کمیٹی کا حصہ نہیں ہونگے۔وفاقی وزیر کا کہنا تھا کہ شہباز شریف نےاسٹبلشمنٹ کے دوسرے نمائندہ وزیر خزانہ محمد اورنگزیب کو بھی اہم کمیٹیوں میں شامل نہیں کیا،انھیں سی سی آئی اور نجکاری میں شامل نہیں کیا گیا۔

Facebook
Twitter
LinkedIn
Print
Email
WhatsApp

Never miss any important news. Subscribe to our newsletter.

آئی بی سی فیس بک پرفالو کریں

تجزیے و تبصرے