وفاقی کابینہ نے ڈیجیٹل رائٹس پروٹیکشن اتھارٹی کے مسودے کی منظوری دے دی

وفاقی کابینہ نے ڈیجیٹل رائٹس پروٹیکشن اتھارٹی کے مسودے کی منظوری دے دی ہے۔

ڈیجیٹل رائٹس پروٹیکشن اتھارٹی کے تحت سائبرکرائم انویسٹی گیشن اتھارٹی پولیس اور ایف آئی اے کی پاور اور وسائل استعمال کر سکے گی، اتھارٹی کسی بھی مجرم کی جائیداد ضبط کرنے کی مجاز ہوگی۔

ڈیجیٹل رائٹس اتھارٹی کے تحت وفاقی حکومت کسی بھی سائبر معاملے پر مشترکہ تحقیقاتی ٹیم بنا سکے گی۔

مسودے میں سائبرکرائم کے سیکشن 8 کی سزائیں 3 سال سے بڑھا کر 7 سال کردی گئیں ہیں جبکہ بغیر اجازت کسی کی شناختی معلومات استعمال کرنے پر سزا 3 سال سے بڑھا کر 7 سال کرنے کی تجویز کی گئی ہے۔

ڈیجیٹل رائٹس پروٹیکشن اتھارٹی کے مسودے میں اسٹیٹ بینک کی اجازت کے بغیر ورچوئل یا کرپٹو کرنسی کے استعمال پر 5 سال کی سزا تجویز کی گئی ہے۔

Facebook
Twitter
LinkedIn
Print
Email
WhatsApp

Never miss any important news. Subscribe to our newsletter.

آئی بی سی فیس بک پرفالو کریں

تجزیے و تبصرے