ریاضی کے ایک سوال نے پرواز روک دی

اٹلی کے ایک ماہر اقتصادیات کو اس وقت پریشانی کا سامنا کرنا پڑا جب وہ جہاز میں ریاضی کا ایک سوال حل کر رہے تھے تو ساتھ بیٹھی مسافر خاتون نے اسے مشکوک سرگرمی سمجھتے ہوئے عملے کو آگاہ کر دیا۔

گوریڈو مینزیو کو اس واقعے کے بعد جہاز سے اتار دیا گیا اور سکیورٹی حکام نے ان سے پوچھ گچھ کی۔

گوریڈو مینزیو نے سکیورٹی اہلکاروں کو دیکھایا کہ وہ کیا کر رہے تھے جس کے بعد انھیں جہاز میں دوبارہ سوار ہونے کی اجازت دی گئی لیکن اس دوران پرواز میں دو گھنٹے کی تاخیر ہو چکی تھی۔

گوریڈو مینزیو نے واشنگٹن پوسٹ کو بتایا ہے کہ انھیں جہاز سے نکالنے پر پائلٹ شرمندگی محسوس کر رہا تھا۔

انھوں نے فیس بک پر لکھا:’ یہ تجربہ ناقابل یقین تھا اور انھیں اس پر ہنسی آئی۔‘

مینزیو یونیورسٹی آف پنسلوانیا میں پروفیسر ہیں اور وہ ایک لیکچر دینے انٹاریو جا رہے تھے۔

جہاز روانہ ہونے سے پہلے ان کے برابر میں بیٹھی خاتون نے عملے کے ایک رکن کو کاغذ پرپیغام دیا۔

انھوں نے پہلے کہا کہ وہ بیمار محسوس کر رہی ہیں تاہم بعد میں مینزیو کی سرگرمی کے بارے میں بتایا۔

مینزیو نے فیس بک پر مزید لکھا:’یہ تھوڑا مزاحیہ تھا اور تھوڑا پریشان کن۔ خاتون نے صرف میری طرف دیکھا، لکھے ہوئے پراسرار فارمولے کو دیکھا اور نتیجہ اخد کر لیا کہ یہ کچھ اچھا نہیں۔ اور اس کی وجہ سے پرواز میں تاخیر ہو گئی۔‘

انھوں نے امریکی خبر رساں ایجنسی اے پی کو بتایا ہے کہ عملے کو پرواز میں تاخیر کا فیصلہ کرنے سے پہلے اضافی جانچ پڑتال کرنی چاہیے۔

مینزیو نے کہا:’مشکوک سرگرمی کی اطلاع ملنے پر اضافی معلومات حاصل نہ کرنے کی صورت میں بہت زیادہ مسائل پیدا ہو سکتے ہیں، خاص کر غیر ملکیوں سے نفرت پر مبنی رویہ پیدا ہو سکتا ہے۔‘

ایئر وسکونسن ایئر کی علاقائی شراکت دار امریکی ایئر لائن نے کہا ہے کہ عملے نے بیمار مسافر کی دیکھ بھال سے متعلق قواعد و ضابط پر عمل کیا اور اس کے بعد اس کے الزامات کی تفتیش کی۔ اس سے معلومات ہوا کہ یہ درست نہیں۔‘

پروفیسر کی شکایت کرنے والی خاتون کو بعد میں ایک دوسرے پرواز پر روانہ کیا گیا۔

Facebook
Twitter
LinkedIn
Print
Email
WhatsApp

Never miss any important news. Subscribe to our newsletter.

آئی بی سی فیس بک پرفالو کریں

تجزیے و تبصرے