‘فوج 50 تجارتی ادارے چلا رہی ہے’

اسلام آباد: سینیٹ میں پاکستان کی مسلح افواج کے مختلف ونگز کی جانب سے چلائے جانے والے تجارتی اداروں کی تفصیلات پیش کی گئیں۔

پاکستان پیپلز پارٹی (پی پی پی) سے تعلق رکھنے والے سینیٹر فرحت اللہ بابر کے سوال پر وزیر دفاع خواجہ آصف نے اپنے تحریری جواب کے ذریعے ایوان کو بتایا کہ ملک بھر میں 50 کے قریب پروجیکٹس، یونٹس اور ہاؤسنگ کالونیاں کام کررہی ہیں جن کا انتظامی کنٹرول فوجی فاؤنڈیشن، شاہین فاؤنڈیشن، بحریہ فاؤنڈیشن، آرمی ویلفیئر ٹرسٹ اور ڈیفنس ہاؤسنگ اتھارٹیز کے پاس ہے۔

یہ بھی پڑھیں: آئی ایس پی آر کے تحت کتنے ایف ایم چینلز چلائے جارہے ہیں؟
سینیٹ میں پیش کی جانے والی تفصیلات کے مطابق پاکستان کے بڑے شہروں کراچی، لاہور، راولپنڈی، اسلام آباد، ملتان، گجرانوالہ، بہاولپور، پشاور اور کوئٹہ میں 8 ڈٰ ایچ اے قائم کیے گئے جن کا قیام زیادہ تر آرڈیننس کے ذریعے عمل میں آیا۔

اس کے علاوہ ملک بھر میں آرمی ویلفیئر ٹرسٹ (اے ڈبلیو ٹی) کے تحت 16 ، فوجی فاؤنڈیشن کے تحت 15 اور شاہین فاؤنڈیشن کے تحت 11 پروجیکٹس یا یونٹس کام کررہے ہیں۔

ایوان بالا کو بتایا گیا کہ پاکستان میں بحریہ فاؤنڈیشن کے زیر انتظام کوئی رہائشی کالونی موجود نہیں تاہم ایک آف شور ایل این جی پروجیکٹ زیر غور ہے۔

آرمی ویلفیئر ٹرسٹ کی جانب سے چلائے جانے والے پروجیکٹس/ یونٹس
• پاک پتن اور اوکاڑہ میں دو اسٹڈ فارمز
• آرمی ویلفیئر شوگر ملز، بدین
• عسکری پروجیکٹ (جوتے اور اونی کپڑے) لاہور
• آرمی ویلفیئر میس اور بلیو لگون ریسٹورینٹ، راولپنڈی
• لاہور، بڈابیر اور سنگ جانی میں تین چھوٹی ہاؤسنگ اسکیمز کے حوالے سے ریئل اسٹیٹ
• عسکری جنرل انشورنس کمپنی لمیٹڈ راولپنڈٰی
• عسکری ایوی ایشن سروسز، راولپنڈی
• عکسری گارڈز، پرائیوٹ لمیٹڈ جس کا ہیڈ آفس لاہور میں ہے
• عسکری فیولز(سی این جی) جس کا ہیڈ آفس راولپنڈی میں ہے
• عسکری سیڈز، اوکاڑہ
• عسکری انٹرپرائزز، راولپنڈی
• فوجی فاؤنڈیشن سے حاصل کردہ فوجی سیکیورٹی سروسز جس کا ہیڈ آفس راولپنڈی میں ہے
• عسکری اپیریل، لاہور
• عسکری لگون، فیصل آباد
• ایم اے ایل پاکستان لمیٹڈ کراچی
فوجی فاؤنڈیشن کی تحت چلائے جانے والے پروجیکٹس/ یونٹس
فوجی سیریئلز
فاؤنڈیشن گیس
فوجی فرٹیلائزر کمپنی لمیٹڈ
فوجی سمینٹ کمپنی لمیٹڈ
فوجی آئل ٹرمینل اینڈ ڈسٹلیری کمپنی لمیٹڈ
فوجی کبیر والا پاور کمپنی لمیٹڈ
فاؤنڈیشن پاور کمپنی کمپنی (ڈہرکی) لمیٹڈ
عسکری سیمینٹ لمیٹڈ
عسکری بینک لمیٹڈ
فاؤنڈیشن ونڈ انرجی (I&II) لمیٹڈ
نون پاکستان لمیٹڈ لاہور
فوجی میٹ (گوشت) لمیٹڈ
فوجی فرٹیلائزر بن قاسم لمیٹڈ
فوجی اکبر پارشیا میرین ٹرمینل لمیٹڈ جس کا ہیڈ آفس کراچی میں ہے
فوجی فاؤنڈیشن کی جانب سے پاکستان ماروک فوسفور ایس اے کے کے نام سے 2008 میں مراکش میں بھی ایک کمپنی قائم کی گئی تھی۔

اسی طرح شاہین فاؤنڈیشن جو کہ پاکستان ایئرفورس کا ٹرسٹ ہے اس کے تحت چلائے جانے والے پروجیکٹس، یونٹس اور رہائشی کالونیوں کی تفصیلات درج ذیل ہے:

شاہین ایئرپورٹ سروسز
شاہین ایرو ٹریڈرز
شاہین Knitwear
شاہین کمپلیکس کراچی
شاہین کمپلیکس لاہور
شاہین میڈیکل سروسز
ہاک ایڈورٹائزنگ
فضائیہ ویلفیئر ایجوکیشن اسکول سسٹم
ایس اے پی ایس ایوی ایشن کالج
ایئر ایگل ایوی ایشن اکیڈمی
شاہین ویلفیئر ہاؤسنگ اسکیم پشاور۔
سینیٹ کو بتایا گیا کہ شاہین فاؤنڈیشن کا قیام چیریٹیبل اینڈاؤمنٹ ایکٹ 1890 کے تحت 1977 میں عمل میں آیا جس کا مقصد پاکستان فضائیہ کے حاضر اور ریٹائرڈ اہلکاروں، سویلینز اور ان کے اہل خانہ کی فلاح و بہبود کے لئے کام کرنا تھا اور اس مقصد کو پورا کرنے کیلئے صنعتی اور تجارتی کمپنیوں کے ذریعے فنڈز جمع کرنا تھا۔

یہ خبر 21 جولائی 2016 کے ڈان اخبار میں شائع ہوئی

Facebook
Twitter
LinkedIn
Print
Email
WhatsApp

Never miss any important news. Subscribe to our newsletter.

آئی بی سی فیس بک پرفالو کریں

تجزیے و تبصرے