ان 12 غذائی اشیاءکو کبھی فریج میں نہ رکھیں

جب بات آتی ہے خوراک کو مناسب طریقے سے ذخیرہ کرنے کی تو کچھ کیا اکثر اس کے لیے فریج، فریزر وغیرہ کا انتخاب کرتے ہیں مگر کیا یہ واقعی ٹھیک ہے؟

حقیقت تو یہ ہے کہ کچھ چیزیں فریج میں رکھنا انہیں خراب رکھنے کے مترادف ہوتا ہے اور وہ کمرے کے عام درجہ حرارت میں زیادہ فریش رہتی ہیں۔

تو یہاں ایسی ہی غذائی اشیاءکے بارے میں جانے جن کو فریج میں رکھا جائے تو وہ خراب ہوجاتی ہیں۔

[pullquote]چاکلیٹ
[/pullquote]

سرد درجہ حرارت چاکلیٹ کی سطح پر سفید جھاگ سے بنا دیتا ہے جس کے نتیجے میں اس کا قدرتی ذائقہ ختم ہوجاتا ہے اور یہ صحت کے لیے نقصان دہ بھی ثابت ہوسکتی ہے۔

[pullquote]انار اور پپیتا
[/pullquote]

انار اور پپیتا فریج میں رکھنے سے بہت جلد خراب اور صحت کے لیے نقصان دہ ثابت ہوسکتے ہیں، انہیں کسی کاغذ کی کئی تہیں بنا کر پیک کرکے خشک اور تاریک جگہ پر رکھیں۔

[pullquote]بینگن
[/pullquote]

بینگن بھی فریج کے اندر سرد درجہ حرارت کے حوالے سے بہت زیادہ حساس سبزی ہے، فریج کے اندر یہ نرم اور سطح سے داغ دار ہوجاتی ہے، تو اسے کمرے کے درجہ حرارت میں رکھنا ہی زیادہ بہتر ہوتا ہے۔

[pullquote]خربوزے
[/pullquote]

خربوزوں کو فریج میں رکھا جائے تو اس میں شامل متعدد اینٹی آکسائیڈنٹس ختم ہوجاتے ہیں۔ ایک امریکی تحقیق کے مطابق خربوزوں کو کمرے کے درجہ حرارت میں رکھنا زیادہ بہتر ہوتا ہے کیونکہ اس طرح پھل میں شامل اجزاءجیسے بیٹا کیروٹین وغیرہ بڑھ جاتے ہیں جو صحت مند جلد اور بینائی کے لیے فائدہ مند ہوتے ہیں۔ فریج کی ٹھنڈی ہوا اینٹی آکسائیڈنٹس کی نشوونما کو ختم کرکے رکھ دیتی ہے۔

[pullquote]آلو
[/pullquote]

سرد درجہ حرارت آلو میں پائے جانے والی نشاستہ کو شوگر میں تبدیل کردیتا ہے۔ اس کے نتیجے میں اس کے ذائقے میں ہلکی سی مٹھاس آجاتی ہے۔ آلوﺅں کو 45 فارن ہائیٹ درجہ حرارت میں رکھنا بہترین ہوتا ہے یعنی کسی بھی کاغذ کے تھیلے میں ڈال کر کچھ میں رکھنا کافی ہوتا ہے۔ سورج کی روشنی میں رکھنا البتہ اسے خراب کرسکتا ہے۔

[pullquote]پیاز[/pullquote]

اس سبزی کو تازہ رہنے کے لیے ہوا کی ضرورت ہوتی ہے، لہذا کاغذ کے کسی تھیلے میں انہیں رکھنا زیادہ بہتر ہوتا ہے مگر کبھی آلوﺅں کے قریب نہ رکھیں کیونکہ پیاز میں ایسے گیس اور نمی خارج ہوتی ہے جو آلوﺅں کو جلد خراب کرسکتے ہیں۔

[pullquote]ٹماٹر[/pullquote]

ٹھنڈی ہوا ٹماٹروں میں کیمیکل تبدیلیاں لاتی ہے اور ان کا ذائقہ متاثر بلکہ خراب ہونے لگتا ہے۔ ٹماٹروں کو کچن کے کاﺅنٹرز پر رکھنا زیادہ بہتر ہوتا ہے جہاں ان کا ذائقہ زیادہ عرصے تک برقرار رہتا ہے۔

[pullquote]لہسن
[/pullquote]

لہسن کو فریج میں رکھنا اس میں موجود دیگر اشیاءکے اندر بھی بو پیدا کردیتا ہے جبکہ یہ نرم اور پھپھوندی زدہ بھی ہوسکتی ہے۔ فریج کے مقابلے میں لہسن کو کچن کی کسی خشک اور ٹھنڈی جگہ پر رکھنا زیادہ بہتر ہوتا ہے۔

[pullquote]بریڈ
[/pullquote]

ڈبل روٹی یا بریڈ کو فریج میں رکھا جائے تو یہ جلد خشک ہوجاتی ہے۔ اگر تو آپ اسے ایک یا دو دن کے اندر استعمال کرنا چاہتے ہیں تو اسے کچن کاﺅنٹر یا فریزر میں رکھیں تو زیادہ بہتر ہے۔

[pullquote]زیتون کا تیل
[/pullquote]

زیتون کے تیل کو فریج کی بجائے باہر ہی کسی ٹھنڈی اور تاریک جگہ پر رکھنا چاہئے، فریج میں یہ گاڑھا ہوکر سخت ہوجاتا ہے بالکل مکھن کی طرح۔

[pullquote]کافی
[/pullquote]

اگر آپ فریج میں کافی رکھ دیں تو اس کا ذائقہ ختم ہوجائے گا اور اس کی مہک فریج میں رچ بس جائے گی۔ اس کے مقابلے میں کافی کو ٹھنڈی جگہ پر رکھنا چاہئے تاکہ اس کا ذائقہ اور تازگی برقرار رہے۔

[pullquote]شہد
[/pullquote]

شہد کو تو فریج میں کبھی رکھنے کی ضرورت نہیں یہ خود ہی ہر حال میں ٹھیک رہتا ہے بلکہ یہ کبھی خراب نہیں ہوتا بس آپ کو اس کا ڈھکن مضبوطی سے بند کرنا ہوتا ہے۔ فریج میں رکھنے سے شہد کی قلمیں بن جاتی ہیں۔

Facebook
Twitter
LinkedIn
Print
Email
WhatsApp

Never miss any important news. Subscribe to our newsletter.

آئی بی سی فیس بک پرفالو کریں

تجزیے و تبصرے