انسداد دہشت گردی عدالت میں4 مقدمات میں عمران خان کی ضمانت منظور

انسداد دہشت گردی کی عدالت نے پاکستان تحریک انصاف عمران خان کی پارلیمنٹ حملہ کیس سمیت 4 مقدمات میں ضمانت منظورکرلی۔

عمران خان کی ان مقدمات میں دو، دو لاکھ روپے کے مچلکوں کے عوض ضمانت منظورکی گئی۔

انسداد دہشت گردی کی عدالت نے عدم پیشی پر عمران خان کو سمن جاری کیے تھے پیش نہ ہونے پر ان کےقابل ضمانت وارنٹ جاری کیے گئے تھے۔

عدالت نے چیئرمین پی ٹی آئی عمران خان کو حکم دیا کہ وہ آج ہی کیس میں شامل تفتیش ہوں ،پولیس کو بیان ریکارڈ کرائیں ۔
انسداد دہشت گردی کی عدالت نے کیس کی سماعت 24 نومبر تک ملتوی کردی۔

پیشی کے بعد میڈیا سے گفتگو میں عمران خان کا کہنا تھا کہ اگرمجھ پردہشت گردی کےکیس کرسکتےہیں تو کسی پر بھی کر سکتے ہیں،دہشت گردی کےنام پرکسی کےخلاف بھی وارنٹ نکال سکتےہیں۔

انہوں نے کہا کہ خلاف سیاسی بنیادوں پر کیس بنایاگیا،پرامن احتجاج پردہشت گردی کا کیس بنا دیا گیا۔

چیئرمین پی ٹی آئی نے کہا کہ اسحاق ڈارپراربوں روپے کی کرپشن کا کیس ہے،جس دن اسحاق ڈارکانام نیب میں آیا تھا اسی دن انہیں مستعفی ہوجانا چاہیے تھا۔

عمران خان نے کہا کہ ملک کاسب سے بڑا مسئلہ منی لانڈرنگ ہے،اسحاق ڈارپراربوں روپے کی کرپشن کا کیس ہے،منی لانڈرنگ کرنےوالا ملک کاوزیرخزانہ کیسےہوسکتاہے؟

Facebook
Twitter
LinkedIn
Print
Email
WhatsApp

Never miss any important news. Subscribe to our newsletter.

مزید تحاریر

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

تجزیے و تبصرے