خواتین سمیت 3 افراد قتل، طالبِ علم جنسی تشدد کا نشانہ بن گیا

سکھر میں مسلح افراد کی فائرنگ سے دو خواتین سمیت 3 افراد ہلاک ہوگئے جبکہ ٹیکسلا میں استاد نے اپنے طالبِ علم کو جنسی تشدد کا نشانہ بنا دیا۔

رپورٹ کے مطابق سکھر ریلوے اسٹیشن کے قریبی علاقے گڈانی پھاٹک میں ملسح افراد نے گھر میں گس کر فائرنگ کردی جس کے نتیجے میں 60 سالہ صادق گڈانی اس کی اہلیہ 55 سالہ خاتون گڈانی اور بہن 40 سالہ سیمی گڈانی ہلاک ہوگئے۔

سکھر کے تھانہ سی سیکشن پولیس کے مطابق واقعہ صادق گڈانی بھی ماضی کا ایک عادی مجرم تھا، تاہم جب نامعلوم مسلح افراد اس کے گھر میں داخل ہوئے تو اس وقت وہ اور اس کے گھر والے سو رہے تھے۔

پولیس حکام کا کہنا تھا کہ حملہ آور موقع سے فرار ہونے میں کامیاب ہوگئے جبکہ صادق گڈانی، اس کی اہلیہ اور بہن کی لاش کو پوسٹ مارٹم کے لیے سول ہسپتال سکھر منتقل کیا گیا، جس کے بعد لاشیں گھر والوں کے حوالے کردی گئیں۔

پولیس حکام نے بتایا کہ صادق گڈانی اور اس کے حریف یوسف گڈانی کے درمیان دو برس پہلے کارو کاری پر جھگڑا ہوا تھا۔

انہوں نے دعویٰ کیا کہ اس لوائی میں میں صادق گڈانی کے گروپ نے یوسف گڈانی کے نوجوان نوید گڈانی پر کاروکاری کا الزام عائد کرکے قتل کردیا تھا۔

پولیس نے امکان ظاہر کیا کہ صادق گڈانی کے قتل واقعہ بھی اسی دشمنی کا نتیجہ ہوسکتا ہے۔

دوسری جانب ٹیکسلا کے تھانہ حسن ابدال کی حدود میں ایک استاد نے اپنے طالبِ علم کو جنسی تشدد کا نشانہ بنایا اور کی فلم بندی بھی کی۔

حسن ابدال تھانہ میں دائر درخواست میں بتایا گیا کہ ایک استاد نے اپنے 9ویں جماعت کے طالبِ علم کو اس کا رول نمبر سلپ لینے کے لیے اپنے ساتھ لے گیا۔

رپورٹ کے مطابق درخواست میں بتایا گیا کہ استاد اور اس کے دوست نے لڑکے کو جنسی تشدد کا نشانہ بنایا اور واقعے کی فلم بندی بھی کی۔

پولیس نے پاکستان پینل کوڈ کی جنسی ہراساں کرنے کی دفعات کے مقدمہ درج کرلیا، تاہم اب تک کوئی بھی گرفتاری عمل میں نہیں آسکی۔

Facebook
Twitter
LinkedIn
Print
Email
WhatsApp

Never miss any important news. Subscribe to our newsletter.

آئی بی سی فیس بک پرفالو کریں

تجزیے و تبصرے