انتظار کو سادہ لباس پولیس اہلکاروں نے قتل کیا، عبوری چالان عدالت میں پیش

کراچی کے علاقے ڈیفنس میں 19 سالہ نوجوان انتظار قتل کیس کے تفتیشی افسر نے عبوری چالان انسداد دہشتگردی عدالت میں پیش کردیا جس میں کہا گیا ہے کہ انتظار احمد کو پولیس اہلکاروں نے قتل کیا، قتل کرنے والے اہلکار اُس وقت سادہ لباس میں تھے۔

تفتیشی افسر کی جانب سے پیش کیے جانے والے چالان میں سی سی ٹی وی فوٹیج کا بھی ذکر کیا گیا ہے۔ چالان پیش ہونے کے بعد ‎انتظار قتل کیس اہم رخ اختیار کر گیا ہے کیوں کہ پولیس نے اسے دہشت گردی کا مقدمہ قرار دے دیا ہے۔

چالان میں کہا گیا ہے کہ پولیس اہلکاروں نے انتظار کا قتل کیا،واقعے میں ملوث اہلکار سادہ لباس میں تھے۔

چالان میں واقعہ کی سی سی ٹی وی فوٹیج کا بھی ذکر کیا گیا ہے جبکہ یہ بھی بتایا گیا ہے کہ 9 پولیس اہلکار گرفتار اور ایک انسپکٹر ضمانت پر رہا ہے۔

گرفتار ملزمان میں انسپکٹر طارق محمود، اظہر احسان، غلام عباس سمیت دیگر شامل ہیں۔

Facebook
Twitter
LinkedIn
Print
Email
WhatsApp

Never miss any important news. Subscribe to our newsletter.

آئی بی سی فیس بک پرفالو کریں

تجزیے و تبصرے