بھارت : گائےکاگوشت کھانےکےالزام میں مسلمان قتل

muslim

بھارت میں ہندو انتہا پسندوں نے ایک اور مسلمان کی جان لے لی۔ نئی دہلی کے قریب قصبے میں 50 سالہ شخص پر گائے کو گوشت کھانے کا الزام لگایا اور تشدد کرکے مار ڈالا۔

ہندو انتہا پسند بھارت میں مسلمانوں کو کسی صورت برداشت کرنے کو تیار نہیں،سیکولر کہلانے والے ملک میں پھر ایک ایسا واقعہ پیش آیا جس نے ہندو انتہا پسندی کے مکروہ چہرے کو بے نقاب کردیا۔

نئی دہلی کے قریبی قصبے دادری میں ایک مسلمان گھرانے میں گائے کا گوشت کھائے جانے کی افواہ پھیلی،انتہاپسندوں کا ہجوم اخلاق احمد کے گھر پہنچا اور 50 سالہ اخلاق احمد اور ان کے بیٹے کو گھسیٹ کر گھر سے باہر نکالا۔

درجنوں انتہا پسندوں نے باپ بیٹے کو شدید تشدد کا نشانہ بنایا،محمد اخلاق زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے دم توڑ گئے جبکہ بیٹا اسپتال میں زیرعلاج ہے۔

بھارتی میڈیا کے مطابق واقعے کے بعد پولیس نے 6 افراد کو حراست میں لے لیا ہے جبکہ اخلاق احمد کے گھر سے ملنے والے گوشت کو فارنزک ٹیسٹ کے لیے لیبارٹری بھجوا دیا گیا ہے

Facebook
Twitter
LinkedIn
Print
Email
WhatsApp

Never miss any important news. Subscribe to our newsletter.

آئی بی سی فیس بک پرفالو کریں

تجزیے و تبصرے