ٹی وی اینکر مرید عباس اور خضر کے قتل کی گتھیاں سلجھنے لگیں

تفصیلات کے مطابق کراچی میں منگل کی رات قتل کیے گئے ٹی وی اینکر مرید عباس اور خضر حیات کے قتل کی گتھیاں سلجھنے لگی ہیں۔

واردات کی سی سی ٹی وی وڈیو بھی منظر عام پر آگئی ہے جس میں مرکزی ملزم عاطف زمان اپنے دفتر میں موجود مرید عباس کو قتل کرنے کے بعد خضر نامی دوسرے شخص کو قتل کرنے عمارت سے باہر جارہا ہے، ملزم کا بھائی عدنان زمان بھی اس کے ساتھ ہے۔

اس لرزہ خیز واردات کی وجہ ملزم عاطف زمان کے ٹائروں کا بزنس بنا، ملزم نے اپنے کاروبار میں مرید عباس سمیت کئی افراد سے 20 کروڑ روپے سے زائد کی سرمایہ کرا رکھی تھی۔

سرمایہ کاری پر منافع ہر ماہ دیا جاتا تھا تاہم اسمگل شدہ ٹائروں کی بڑی کھیپ پکڑی گئی تو بڑا نقصان ہوا جس کے بعد گزشتہ 3 ماہ سے منافع کی ادائیگی بند تھی۔

سرمایہ کاروں نے تنگ کرنا شروع کیا تو ملزم عاطف نے انہیں اپنے دفتر بلا کر قتل کرنے کا منصوبہ بنایا۔

منگل کی شب ملزم نے مرید عباس اور خضر حیات سمیت 5 افراد کو فون کیا جس میں سے 3 اس کے جھانسے میں آکر دفتر پہنچے اور 2 مارے گئے جب کہ عمر ریحان فرار ہونے میں کامیاب رہا۔

پولیس نے ملزم عاطف زمان کے کال ریکارڈ سے 35 افراد کی تفصیلات حاصل کی ہیں۔

دوسری جانب ملزم عاطف کو نجی اسپتال میں ہوش آگیا ہے اور اس نے پولیس کو اپنے ابتدائی بیان میں لین دین کے معاملے کے تصدیق کی ہے۔

دہرے قتل کا مقدمہ درج کرلیا گیا ہے جب کہ مرکزی ملزم کا بھائی عدنان زمان روپوش ہوگیا ہے جس کی تلاش جاری ہے۔

یاد رہے کہ گزشتہ شب ڈیفنس میں نجی ٹی وی کے اینکر مرید عباس اور خضر حیات نامی شخص کو بزنس پارٹنر نے قتل کیا تھا جس کے بعد قاتل نے خود کو بھی گولی مارکر خودکشی کی کوشش کی تھی تاہم وہ اسپتال میں زیر علاج ہے۔

[pullquote]کراچی میں اینکر کو قتل کرنے کے واقعے کی ویڈیو سامنے آگئی[/pullquote]

کراچی: ڈیفنس میں بزنس پارٹنر کے ہاتھوں نجی ٹی وی کے اینکر کو قتل کرنے کے واقعے کی ویڈیو منظرعام پر آگئی۔

https://www.youtube.com/watch?v=kvkya94f3Zg

گزشتہ روز ڈیفنس میں نجی ٹی وی کے اینکر مرید عباس اور خضر حیات نامی شخص کو مبینہ بزنس پارٹنر نے قتل کردیا، مبینہ قاتل نے بعد میں خود کو بھی گولی مارلی جو اس وقت تشویش ناک حالت میں زیر علاج ہے۔

جیو نیوز نے واقعے کی سی سی ٹی وی ویڈیو حاصل کرلی ہے جس میں مبینہ ملزم عاطف زمان کو اسلحہ لے کر اپنے دوست اور ایک شخص کے ساتھ بھاگتے دیکھا جاسکتا ہے۔

ویڈیو میں مزید دیکھا جاسکتا ہے کہ فائرنگ کے بعد ایک مردہ شخص کو ایک خاتون اور دیگر لوگ لفٹ میں اٹھا کر لارہے ہیں۔

[pullquote]تفتیش کا آغاز[/pullquote]

دوسری جانب اینکر مرید عباس اور خضرحیات کے قتل کی تفتیش کا آغاز کردیا گیا ہے۔

تفتیشی حکام کے مطابق مقتول مرید عباس اور ملزم عاطف ایک ہی رہائشی عمارت میں رہتے تھے، ملزم نے مقتولین کے ساتھ دیگر کاروباری شراکت داروں کو بھی فون کرکے بلایا تھا۔

حکام کے مطابق ملزم نے مرید عباس اور خضر حیات سمیت پانچ افراد کو کال کی، اس دوران ملزم عاطف نے خضر حیات کو چھوٹا بخاری جب کہ مرید عباس کو بڑا بخاری بلایا جن کا ریکارڈ حاصل کر لیا گیا ہے۔

تفتیشی حکام کا کہنا ہے کہ تحقیقات جاری ہیں، تمام افراد کو تفصیلات لینے کے لیے بلایا جائے گا اور اگر قتل میں استعمال ہونے والا اسلحہ کسی اور کا نکلا تو نیا مقدمہ درج کیا جائے گا۔

[pullquote]مقتول کی میت آبائی علاقے روانہ[/pullquote]

ادھر فائرنگ سے قتل ہونے والے مرید عباس کی میت کو کراچی سے اسلام آباد پہنچا گیا گیا ہے جہاں سے ان کی میت کو تدفین کے لیے آبائی علاقے میانوالی لے جایا جائے گا۔

Facebook
Twitter
LinkedIn
Print
Email
WhatsApp

Never miss any important news. Subscribe to our newsletter.

آئی بی سی فیس بک پرفالو کریں

تجزیے و تبصرے