برطانوی ماہرین نے کینسر کی رسولی کا پتا لگانے والا آلہ تیار کرلیا

toolسائنسدانوں نے پہلی مرتبہ ایک ایسا انوکھا آلہ تیار کیا ہے جسے اسٹار ٹریک جیسی سائنس فکشن فلموں میں دکھایا گیا ہے اور اس سے مریض کو چھوئے بغیر اس میں سرطانی رسولی کا پتا لگایا جاسکتا ہے۔

برطانیہ کی اسٹین فورڈ یونیورسٹی کے ماہرین ڈاکٹر امین اربابیاں اور پروفیسر پیئرے خورے یعقوب کا ایجاد کردہ یہ دستی نظام ایم آر آئی اور سی ٹی اسکین سے کم خرچ اور سادہ ایکسرے سے بھی زیادہ محفوظ ہے،  یہ آلہ کچھ دیر کے لیے مائیکروویو شعاعیں خارج کرتا ہے جس سے جسم کے کسی حصے کو گرم کیا جاتا ہے اور اس دوران رسولی کا پتا لگایا جاتا ہے۔ یہ آلہ جلد کو چھوئے بغیر مطلوبہ مقام کوایک فٹ کی دوری سے ایک ڈگری سینٹی گریڈ کے ہزارویں حصے کے برابر گرم کرکے اس کا جائزہ لیتا ہے۔

درجہ حرارت میں فرق سے رسولی گرم ہوکر سکڑتی اور پھیلتی ہے جس سے الٹراساؤنڈ جیسی شعاعیں خارج ہوتی ہیں اور اس سے کینسر کی ابتدائی رسولی کی شناخت کی جاسکتی ہے۔ وجہ یہ ہے کہ رسولی جسم کے بقیہ حصے کے مقابلے میں مختلف انداز میں حرارت جذب یا خارج کرتی ہیں جسے خاص آلات سے محسوس کیا جاسکتا ہے۔

Facebook
Twitter
LinkedIn
Print
Email
WhatsApp

Never miss any important news. Subscribe to our newsletter.

آئی بی سی فیس بک پرفالو کریں

تجزیے و تبصرے