کراچی کے عوام کی جان و مال کو خطرہ؛ فائر فائٹرز نے کام چھوڑ دیا

کراچی بھر کے فائر فائٹرز کی جانب سے کام چھوڑ ہڑتال کی جا رہی ہے جس کے باعث عوام کی جان و مال کو خطرہ لاحق ہو گیا ہے۔

فائر فائٹر ویلفئیر آرگنائزیشن کے مطابق فائر بریگیڈ ملازمین نے کام کرنے سے انکار کر دیا ہے۔

فائر فائٹرز کی جانب سے کراچی کے تمام اسٹیشنز پر متفقہ فیصلے کے تحت کام چھوڑ ہڑتال کی جا رہی ہے۔

ملازمین کا کہنا ہے فائر فائٹرز اب کسی بھی حادثے کی صورت میں اسٹیشن سے فائر ٹینڈرز نہیں نکالیں گے۔

ملازمین کا مؤقف ہے کہ گزشتہ 17ماہ سے فائر رسک الاونس نہیں ملا، اس وقت تک کام شروع نہیں کریں گے جب تک فائر رسک الاؤنس نہیں ملتا۔

فائرفائٹر ویلفئیر آرگنائزیشن کے مطابق ملازمین کا یہ بھی کہنا ہے کہ ایک ماہ سے تنخواہوں کی ادائیگی بھی نہیں کی جا رہی اور 3 ماہ سے تنخواہ میں ہونے والا اضافہ بھی نہیں ملا۔

آگ بجھانے کا کام ہر صورت کیا جائے گا: چیف فائر آفیسر

دوسری جانب چیف فائر آفیسر تحسین صدیقی کا کہنا ہے کہ کراچی کے تمام آپریشنل فائر اسٹیشن کھلے ہیں لیکن فائر فائٹرز کے احتجاج کے باعث آپریشنل سرگرمیاں متاثر ہو سکتی ہیں۔

تحسین صدیقی کا کہنا ہے کہ فائر فائٹرز کا احتجاج معمول بن چکا ہے، کراچی میں کسی بھی ہنگامی صورت میں آگ بجھانے کا کام ہر صورت کیا جائے گا۔

چیف فائر آفیسر نے کہا کہ فائر فائٹرز نے آتشزدگی کی صورت میں کام کرنے کی یقین دہانی کرائی ہے۔

Facebook
Twitter
LinkedIn
Print
Email
WhatsApp

Never miss any important news. Subscribe to our newsletter.

آئی بی سی فیس بک پرفالو کریں

تجزیے و تبصرے